افغانستان میں دہشت گردوں کو اسلحہ سپلائی بند کی جائے: لاوروف thumbnail 8

افغانستان میں دہشت گردوں کو اسلحہ سپلائی بند کی جائے: لاوروف

افغانستان سے وسطی ایشیاء کی طرف بڑھتی ہوئی ہجرت کا سبب ملک کی بگڑتی ہوئی انسانی صورتحال ہے لہٰذا اسے مزید بگڑنے سے روکنے کی ضرورت ہے: وزیر خارجہ سرگے لاوروف

روس نے کہا ہے کہ افغانستان میں دہشت گردوں کے لئے اسلحہ سپلائی کے راستوں کو فوری طور پر بند کرنے کی ضرورت ہے۔

روس کے وزیر خارجہ سرگے لاوروف نے دارالحکومت ماسکو میں منعقدہ 17 ویں خودمختار حکومتوں کے خفیہ و سلامتی اداروں کے سربراہی اجلاس سے خطاب کیا۔

خطاب میں انہوں نے کہا ہے کہ افغانستان سے وسطی ایشیاء کی طرف بڑھتی ہوئی ہجرت کا سبب ملک کی بگڑتی ہوئی انسانی صورتحال ہے لہٰذا اسے زیادہ بگڑنے سے روکنے کی ضرورت ہے۔

لاوروف نے کہا ہے کہ ہمیں اندیشہ ہے کہ، دہشت گرد اور دیگر متعصب عناصر مہاجرین کے روپ میں جنوبی سرحدوں سے ملک سے باہر نکل سکتے ہیں اور ہم اس اندیشے کا کھُلا اظہار بھی کر رہے ہیں۔ ان عناصر کو ہر طرح کا اسلحہ فراہم کرنے والے راستوں کو فوری طور پر بند کیا جانا ضروری ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ خودمختار حکومتوں کی سوسائٹی، کولیکٹیو سکیورٹی سمجھوتہ تنظیم اور شنگھائی تعاون تنظیم کے دائرہ کار میں افغانستان سے متعلقہ تعاون میں اضافہ نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ گذشتہ ماہ تاجکستان کے دارالحکومت دوشنبہ میں منعقدہ خودمختار کولیکٹیو سکیورٹی سمجھوتہ تنظیم اور شنگھائی تعاون تنظیم سربراہی اجلاس میں بھی اس پہلو پر غور کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ طالبان نے افغانستان میں امریکہ کی 20 سالہ موجودگی کو ختم کر کے ماہِ اگست میں دوبارہ سے ملکی اقتدار سنبھال لیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں