ہائی اسپیڈ ڈیزل پر سیلز ٹیکس کی شرح میں کمی thumbnail 15

ہائی اسپیڈ ڈیزل پر سیلز ٹیکس کی شرح میں کمی

فوٹو: اے ایف پی

وزارت خزانہ نے ہائی اسپیڈ ڈیزل پر سیلز ٹیکس کی شرح کم کرکے 11.64 فیصد کردی۔

نوٹیفیکشن کے مطابق ہائی اسپیڈ ڈیزل پر سیلز ٹیکس کی شرح 17  فیصد تھی جسے کم کرکے 11.64 فیصد کردیا گیا ہے جبکہ پیٹرول پر سیلز ٹیکس کی شرح بغیر کسی کمی کے 10.54 فیصد، مٹی کے تیل پر شرح 6.70 فیصد اور لائٹ ڈیزل آئل پر سیلز ٹیکس کی شرح 0.20 فیصد برقرار رہے گی۔

سیلز ٹیکس کی نئی شرح کا اطلاق 16 ستمبر سے کردیا گیا ہے۔ واضح رہے  15 ستمبر کو وزارت خزانہ کی جانب سے نوٹیفیکشن جاری کیا گیا تھا جس کے مطابق پیٹرول کی قیمت میں 5 روپے فی لیٹر، ہائی اسپیڈ ڈیزل 5.01 روپے فی لیٹر، مٹی کا تیل 5.46 روپے فی لیٹر اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل 5.92 روپے فی لیٹر اضافہ ہوا تھا جس کے بعد پیٹرول کی قیمت 123.30 روپے فی لیٹر، ہائی اسپیڈ ڈیزل 120.04 روپے، مٹی کا تیل 92.26 روپے اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 90.69 روپے فی لیٹر ہوگئی تھی۔

عالمی مارکیٹ میں 16 اگست کو خام تیل کی قیمت 69.56 ڈالر فی بیرل تھی جو یکم ستمبر کو بڑھ کر 71.28 ڈالر فی بیرل ہوگئی جبکہ 15 روز میں قیمت پھر بڑھی اور 15 ستمبر کو خام تیل کی قیمت 74.48 ڈالر فی بیرل ہوگئی۔ کیونکہ پاکستان بیرون ممالک سے خام تیل درآمد کرتا ہے اور عالمی مارکیٹ میں قیمت میں اضافے سے پاکستان کو مہنگے داموں خام تیل خریدنا پڑ رہا ہے۔

خام تیل کی قیمت میں 5.94 ڈالر فی بیرل کے اضاففے  اور ڈالر کی قیمت 164 روپے سے بڑھ کر 169.50 روپے تک پہنچنے کے بعد اوگرا نے ڈیزل 10 روپے اور پیٹرول 1 روپے فی لیٹر مہنگا کرنے کی سفارش کی تھی جسے حکومت نے مساوی کرکے پیٹرول 5 روپے اور ڈیزل بھی 5.01 روپے فی لیٹر مہنگا کر دیا تھا۔

WhatsApp

FaceBook

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں